SAAD RIZVI CNIC BLOCKED, BANK ACCOUNT FREEZE, PLACED IN FOURTH SCHEDULE #urduheadline

4


فائل فوٹو

کالعدم تنظیم تحریک لبیک پاکستان (ٹی ایل پی) کے سربراہ سعد رضوی کا شناختی کارڈ بلاک، جب کہ بینک اکاؤنٹس منجمد اور جائیداد ضبط کرلی گئی ہے۔

کالعدم تنظیم ٹی ایل پی کے خلاف محکمہ داخلہ پنجاب کی جانب سے کارروائی کا نوٹی فیکیشن جاری کیا۔ محکمہ داخلہ پنجاب کا اہم اجلاس صوبائی وزیر قانون راجہ بشارت کی سربراہی میں 17 اپریل کو ہوا۔ اجلاس میں کالعدم تنظیم تحریک لبیک کے تمام اثاثے منجمد کرنے کی منظوری دی گئی۔

محکمہ داخلہ نے متعلقہ انتظامیہ کو اثاثے فوری طور پر تحویل میں لینے کی ہدایات کر دیں۔ اجلاس میں تحریک کے موجودہ سربراہ سعد رضوی سمیت 6 افراد کا نام ای سی ایل میں ڈالے کی سفار ش کر دی۔

محکمہ داخلہ نے وفاقی وزارت داخلہ کو نام ای سی ایل میں ڈالنے کی سفارش کی ہے۔ سی سی ٹی وی کیمروں سے شناخت ہونے والے درجنوں افراد کی فوری گرفتار ی کا حکم دیدیا۔

دوسری طرف فورتھ شیڈول میں نام شامل ہونے کے بعد مرحوم علامہ خادم حسین رضوی کے بیٹے سعد رضوی کی جائیداد منجمد اور شناختی کارڈ بلاک کردیاگیا، سعد رضوی کوئی بینک اکاؤنٹ استعمال کرسکیں گے نہ جائيدادکی خرید و فروخت کرسکیں گے۔ نیشنل کاؤنٹر ٹیررازم اتھارٹی (نیکٹا) نے بھی تحریک لبیک کا نام کالعدم جماعتوں کی فہرست میں شامل کرلیا۔

نوٹی فیکیشن کے مطابق سعد رضوی کو اصل پاسپورٹ متعلقہ تھانے کےانچارج کوجمع کروانا ہوگا۔ مستقل رہائش گاہ سے کہیں اور جانے پر متعلقہ تھانے سے پیشگی اجازت لینا ہوگی۔ سعد رضوی کو کہاں جانا ہے کس سے ملنا ہے، اس کی بھی تفصیل دینا ہوں گی۔

قبل ازیں شہباز گل کے دعویٰ کے مطابق سعود رضوی کا ہاتھ سے لکھا گیا ایک خط سوشل میڈیا پر شیئر کیا گیا تھا۔ جس میں کالعدم تحریک لبیک پاکستان (ٹی ایل اپی) کے قائد حافظ محمد سعد رضوی نے کہا تھا کہ میں تمام شوریٰ ممبران اور کارکنان تحریک لبیک یا رسول اللہ سے مخاطب ہوں اور یہ اپیل کرتا ہوں کہ ملکی مفاد اور عوام الناس کی خاطر کوئی غیر قانونی قدم نہ اٹھایا جائے۔ حافظ سعد رضوی نے کہا کہ تمام احتجاجی جلسے اور روڈ بلاک فی الفور ختم کیے جائیں، تمام کارکن پر امن طور پر گھروں کو واپس چلے جائیں ، قانون نافذ کرنے والے اداروں سے مکمل تعاون کیا جائے۔ مرکز و مسجد رحمۃ اللعالمین کے باہر بھی احتجاج اور دھرنا فی الفور ختم کر دیا جائے۔



#urduheadline



.

Leave A Reply

Your email address will not be published.