Rawalpindi men try to set Hindu temple on fire #urduheadline

4


hindu-temple-rawalpindi

فائل فوٹو

راولپنڈی کے علاقے پرانہ قلعہ میں نامعلوم افراد کی جانب سے ہندوؤں کے 100 سال پرانے مندر کو جلانے کی کوشش اور تھوڑ پھوڑ کی گئی۔

پولیس کے مطابق واقعہ تھانہ بنی کے علاقے پرانہ قلعہ میں گزشتہ شب پیش آیا۔ مندر میں تزئین و آرائش کا کام جاری تھا جبکہ 24 مارچ کو مندر کے مرکزی دروازے کے سامنے سے تجاوزات ختم کی گئی تھیں۔

انسانی حقوق کے ممبر پریم رتھی نے اپنی ٹویٹ میں لکھا ہے کہ ’’نامعلوم افراد نے مندر کو آگ لگانے کی بھی کوشش کی‘‘۔

پولیس نے واقعہ کی ایف آئی آر درج کرلی۔ ایف آئی آر ای ٹی پی او کے اسسٹنٹ سیکورٹی آفیسر سید علی رضا زیدی کی مدعیت میں درج کی گئی۔

ایف آئی آر کے مطابق ’’پیر کی شام 7 بجے سے شام 8 بجے کے درمیان مردوں کا ایک گروہ مندر میں داخل ہوا اور اس کے مرکزی دروازے اور سیڑھیوں کو نقصان پہنچایا‘‘۔

مندر میں ابھی باقاعدہ ہندووں کی عبادت کا آغاز نہیں ہوا تھا اور کوئی مورتی بھی موجود نہیں تھی۔ لہٰذا مندر میں توڑ پھوڑ کرکے مذہبی عبادت گاہ کا تقدس پامال کیا گیا۔

پولیس نے 15 نامعلوم افراد کے خلاف دفعہ 147، 149 اور 295 کے تحت مقدمہ درج کیا ہے۔ شکایت کنندہ نے پولیس سے مندر کے باہر سیکیورٹی کی درخواست کی ہے۔

واقعے سے متعلق اب تک کسی شخص کو گرفتار نہیں کیا گیا تاہم پولیس کی جانب سے چھاپے مارے جا رہے ہیں۔

واضح رہے کہ 30 دسمبر 2020 کو خیبر پختونخوا کے ضلع کرک میں ہندوؤں کے تاریخی مندر کو حملہ آوروں نے آگ لگا دی تھی۔



#urduheadline



.

Leave A Reply

Your email address will not be published.