Karachi private hospitals start administering Russian Sputnik V vaccine #urduheadline

1


Sputnik-vaccine-russia-reaches-pakistan

فوٹو: اے ایف پی

کراچی کے نجی اسپتالوں میں کرونا وائرس سے بچاؤ کی روسی ویکسین اسپٹنک 5 عام لوگوں کو لگانے کا عمل شروع کردیا گیا۔ ویکسین اب سے او ایم آئی اسپتال ایم اے جناح روڈ اور ساؤتھ سٹی اسپتال کلفٹن میں لگائی جائے گی۔

آرتھو پیڈک اینڈ میڈیکل انسٹی ٹیوٹ (او ایم آئی) میں ویکسینیشن کیلئے سب سے پہلے اپوائنٹمنٹ لینا ضروری ہوگا، آپ بغیر اپوائنمنٹ کے وہاں نہیں جاسکتے۔

آپ اسپتال کے ایمرجنسی ڈیپارٹمنٹ سے ہوتے ہوئے ایڈلٹ ویکسینیشن سینٹر (اے وی سی) پہنچیں گے۔ وہاں راستے میں کئی نشانیاں موجود ہیں، جہاں آپ کو رجسٹریشن ڈیسک سے اپوائنمنٹ دیا جائے گا۔

او ایم آئی میں اسپٹنک 5 ویکسین کی قیمت 13 ہزار روپے مقرر کی گئی ہے جبکہ ویکسینیشن کیلئے صبح 9 بجے سے شام 5 بجے تک کے اوقات مقرر کئے گئے ہیں۔

مزید جانیے: اسپٹنک ویکیسن کی قیمت کئی گُنا زیادہ ہے، ناصرہ اقبال

وہاں ویکسینیشن کے بعد رکنے کیلئے ویٹنگ ایریا موجود ہے، جہاں آپ پر ویکسینیشن کے اثرات کا مشاہدہ کیا جائے گا۔

دنیا بھر میں روسی ویکسین سے ہونیوالے اثرات میں ٹیکے کی جگہ پر درد، سر درد، پٹھوں میں درد شامل ہیں تاہم اس کے کوئی شدید منفی اثرات اب تک رپورٹ نہیں ہوئے۔

او ایم آئی میں جمعہ کو ویکسین لگوانے کے خواہشمندوں کی بڑی تعداد میں آمد کے باعث سہ پہر 2 بجے کے قریب ویکسینیشن کا عمل ختم کردیا گیا تھا۔

ساؤتھ سٹی کے ویکسین انچارج نے سماء ڈیجیٹل سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ تفصیلات آج رات تک فراہم کردی جائیں گی۔

سوشل میڈیا پر کچھ لوگوں کی جانب سے یہ دعویٰ کیا جارہا ہے کہ آغا خان یونیورسٹی اسپتال بھی کرونا وائرس سے بچاؤ کی روسی ویکسین اسپٹنک 5 کے ٹیکے لگارہا ہے۔

اسپتال کے ترجمان نے سماء ڈیجیٹل سے گفتگو میں بتایا کہ فی الحال ہم حکومت کی فراہم کردہ سائنوفارم ویکسین ہی لگارہے ہیں، جب بھی اسپٹک 5 ویکسین لگانے کا عمل شروع ہوگا ہم آگاہ کردیں گے۔

یہ بھی پڑھیں: کرونا وائرس کی برطانوی قسم 60 فیصد زیادہ مہلک ہے، اسد عمر

روسی ویکسین اسپٹنک 5 کی 50 ہزار خواراکیں 18 مارچ کو پاکستان پہنچی تھیں، جو فارما سیوٹیکل کمپنی اے جی پی لمیٹڈ نے درآمد کی تھیں۔ کمپنی نے یہ دوا نجی اسپتالوں میں تقسیم کی۔

سندھ ہائیکورٹ نے جمعرات کو روسی ویکسین اسپٹنک 5 کی فروخت کی اجازت دی تھی۔

ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی آف پاکستان کے وکیل نے عدالت کو بتایا کہ 31 مارچ کو ویکسین کی خوراکیں اے جی پی لمیٹڈ کے حوالے کردی گئیں۔

عدالت کو یہ بھی بتایا گیا کہ ویکسین کی دو ڈوزز کی قیمت 8 ہزار 449 روپے مقرر کی گئی ہے۔

ڈریپ کے وکیل کا کہنا تھا کہ اے جی پی لمیٹڈ کو ویکسین کی درآمد کی اجازت قیمت کے تعین سے قبل دی گئی تھی۔ انہوں نے عدالت سے درخواست کی تھی کہ ایک ہفتے تک فروخت کی اجازت میں تاخیر کی جائے تاکہ قیمتوں کا فیصلہ کیا جاسکے۔

آپ کو روس کی اسپوٹنک 5 ویکسین کے بارے میں کیا جاننا ضروری ہے۔

اسپوٹنک کا نام 1957ء میں خلا میں بھیجے گئے پہلے سوویت سیٹلائٹ کے نام پر رکھا گیا ہے۔

اب تک 56 ممالک میں اس کی منظوری دی جاچکی ہے۔

تحقیق سے پتہ چلتا ہے کہ اس کی افادیت 91.6 فیصد ہے۔

ویکسین کی دو خوراکیں 21 دن کے وقفے سے دی جاتی ہیں۔

اس میں دو بے ضرر اڈینو وائرس ویکٹرز (عام سردی کا وائرس) شامل ہے۔

اسے فریج کے ٹمپریچر 2 سے 8 ڈگری تک محفوظ کیا جاسکتا ہے۔

خبر کی مزید تفصیلات آرہی ہیں۔



#urduheadline



.

Leave A Reply

Your email address will not be published.