Bridge connecting various Shangla villages in shambles #urduheadline

7


مقامی افراد کی جان کو شدید خطرہ لاحق

خیبرپختونخوا کے ضلع شانگلہ میں کئی دیہاتوں کا واحد رابطہ پل خستہ حالی کا شکار ہے، جس کے باعث پُل عبور کرنیوالے افراد کی جان کو شدید خطرہ لاحق ہے۔

رانیال کے مقام پر دریا پر بننے والے لکڑیوں کا يہ پل انتہائی بوسیدہ ہوچکا ہے لیکن مقامی لوگ رابطہ پل استعمال کرنے پر مجبور ہیں۔

شہریوں کا کہنا ہے کہ اس پل کی حالت بہت خراب ہے گاڑی میں مریض یا خواتین گزرتے ہیں تو وہ پیدل ہی پل عبور کرنے پر مجبور ہوتے ہیں کیوں کہ لوگوں کے پاس اس کے علاوہ کوئی اور دوسرا راستہ نہیں ہے۔

عوام کا کہنا ہے کہ 6 سال پہلے اس مقام پر پختہ پل تعمير کرنے کی منظوری دی گئی تھی اور کام بھی کچھ شروع ہوا تھا ليکن پھر مزید کوئی پیشرفت تاحال نہیں ہوسکی ہے۔

شہریوں کا کہنا ہے کہ جب ہم احتجاج کرتے ہیں تو ٹھیکدار آتا ہے اور ایک آدھ ہفتہ کام کرکے دوبارہ غائب ہوجاتا ہے۔

ان کا کہنا ہے کہ رانیال کے ان دیہاتوں کو جانے والی شاہراہ بھی اتنی خستہ حال اور تنگ ہے کہ دو گاڑیوں کا گزرنا بھی مشکل ہوجاتا ہے۔

علاقہ مکینوں نے کہا کہ حکمراں انتخابی مہم کے دوران وعدے تو کرتے ہيں ليکن برسوں بعد بھی اس علاقے کی قسمت نہيں بدل سکی ہے۔



#urduheadline



.

Leave A Reply

Your email address will not be published.