یہ پنڈی کی پچ ہے یا لاہور کا جی ٹی روڈ؟؟؟

پاک انگلینڈ ٹیسٹ سیریز کا پہلا میچ جو کہ راولپنڈی میں کھیلا جارہا ہے۔۔

یہ پنڈی کی پچ ہے یا لاہور کا جی ٹی روڈ؟؟؟

انگلینڈ کے اوپنرز نے میچ کے پہلے دن پر سینچری اسکور کی اور رنز کے انبار لگا دیے اس کے علاوہ کرکٹ کی تاریخ کا  سو سالہ ریکارڈ توڑتے ہوئے 1910 کے بعد 2022 میں کسی بھی ٹیسٹ میں بنائے جانے والے سب سے زیادہ سکور ہیں۔

کرکٹ شائقین اور ماہرین کی جانب سے اس پر بہت زیادہ تنقید کی جا رہی ہے ان کا کہنا ہے کہ اس سے بہتر تھا کہ کسی روڈ پر ہی میچ کھیلا جاتا تو شاید کچھ بہتر رزلٹ آتے ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کرکٹ بورڈ نے انٹر نیشنل لیول کے میچ کے مطابق کوئی خاطر خواہ انتظامات نہیں کیے۔

انگلینڈ نے پاکستان کو 650 رنز کا ہدف دیا جو کہ پاکستان نے چار وکٹوں کے نقصان پر 450 رنز بنا لئے۔۔اسد شفیق اور امام الحق میں سینچری سکور کی۔کسی بھی ٹیسٹ سیریز میں یہ انوکھا قسم کا ریکارڈ ہے کہ ہر اوپننگ جوڑی نے سنچری سکور کی۔

اس ٹیسٹ سیریز میں میں ناقص انتظامات پر شائقین کرکٹ ماہرین سیاست دان ان فنکار برادری سے تعلق رکھنے والے لوگ غرض ہر طبقہ فکر کے لوگ حیران و پریشان ہیں۔