کراچی میں‌ معذور کھلاڑی کا پُراسرار قتل – #urduheadline

-

کراچی: شہر قائد کے علاقے مومن آباد سے لاپتہ ہونے والا سینڈروم کی بیماری میں مبتلا ذہنی معذور کھلاڑی انتقال کرگیا۔

نمائندہ اے آر وائی نیوز کے مطابق پیرا تائی کوانڈو کراچی کے چیمپئن عبید اللہ کو گزشتہ ماہ مومن آباد سے اغوا کیا گیا تھا۔ والد کا کہنا ہے کہ عبید اللہ چار روز بعد گلستان جوہر سے زخمی حالت میں ملا تھا۔

والد نے بتایا کہ عبید اللہ کو کراچی کے جناح اسپتال منتقل کیا گیا، جہاں ڈاکٹرز نے اُسے کئی روز تک مصنوعی طریقے سے سانس دی اور علاج کیا۔

ایک روز قبل جناح اسپتال کے ڈاکٹرز نے عبید اللہ کو طبیعت میں بہتری کے بعد گھر جانے کی اجازت دی۔ والد کا کہنا ہے کہ اسپتال سے گھر آنے کے چار گھنٹے بعد بیٹے کی طبیعت خراب ہوئی اور پھر وہ انتقال کرگیا۔

والد کا کہنا ہے کہ عبید اللہ کو بہیمانہ تشدد کا نشانہ بنایا گیا، جس کی وجہ سے اُس کے جسم اور سر پر گہری چوٹیں آئیں تھیں۔

واضح رہے کہ گزشتہ ماہ عبید اللہ کی تصاویر سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر اپ لوڈ ہوئیں تھیں، صارفین نے دعویٰ کیا تھا کہ ’اس ذہنی معذور لڑکے کو اغوا کرنے کے بعد گردہ نکال کر پھینک دیا گیا‘۔

بعد ازاں جناح اسپتال کی ایگزیکٹیو ڈائریکٹر سیمی جمالی نے اس بات کی تردید کرتے ہوئے بتایا تھا کہ ’عبید اللہ کے جسم پر کوئی ایسا نشان نہیں اور گردہ نکالنے کی خبر  بھی بے بنیاد ہے‘۔

Comments

-


#urduheadline



.

-

اپنا تبصرہ بھیجیں